بیگم کلثوم نواز کی صحت کا سن کر بہت دکھ ہوا اللہ تعالیٰ سے دعا گو ہوں ان کو جلد صحت یاب کریں ـڈاکٹر یاسمین راشد

0
93

پاکستان تحریک انصاف کی این اے 120 کی امیدوار ڈاکٹر یاسمین راشد نے پارٹی رہنمائوں کے ہمراہ یوسی 50شفیق آباد میں ڈور ٹو ڈور کیمپین کے موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن کمیشن کا سسٹم اپنا ہوتا ہے کل تک انتظار کریں گے نہ ہوا تو ایکشن تو پھر الیکشن کمیشن کے سامنے دھرنا دیں گے  ، بیگم کلثوم نواز کی صحت کا سن کر بہت دکھ ہوا اللہ تعالیٰ سے دعا گو ہوں ان کو جلد صحت یاب کریں ، بلال یاسین اور ماجد ظہور کو نوٹس جاری ہو چکے ہے تین دن کے اندر انہوں نے جواب دینا ہے انہوں نے ترقیاتی کام حلقے میں شروع کروا دیے تھے میڈیا کی رپورٹس کے بعد الیکشن کمیشن کے بعد نوٹس لیا، سوال کیا ہے کہ اس کی سزا کیا ہے ،الیکشن کمیشن نے میرے انتخابی دفتر سے فلیکس اتروا لیا ہے ، میری فلیکس تو اتروا دی گئی لیکن خواجہ عمران نذیر کو میں نے خود حلقہ میں کیمپین کرتے ہوئے دیکھا ہے ، ان کی کارکردگی اور میری کارکردگی سب کو پتہ ہے حلقہ میں صوبائی اور وفاقی حکومت الیکشن لڑ رہی ہے مجھے اور کلثوم نواز کو یہ الیکشن لڑنے دیں (ن) لیگ پری پول دھاندلی کر رہی ہے اس کا فوری ایکشن لیا جائے  ، انہوں نے کہا کہ ہم کسی کو تنگ نہیں کر رہے  الیکشن کمپین میں ہم ڈور ٹو ڈور مہم چلا رہے ہیں ، منظور وٹو نے جو بیان دیا وہ اپنی پارٹی کے حوالے سے ہے پرویز ملک سے درخواست کریں گے کہ وہ حلقہ کے عوام کو بے وقوف نہ بنائیں یہ آپ کا حلقہ نہیں ہے ، دعوتیں 17ستمبر کے بعد کھائیں ، (ن) لیگ کا کام قانون توڑنا ہے پی ٹی آئی کی قیادت ایک صفحہ پر ہے چئیرمین عمران خان 26اگست کو لاہور آ رہے ہے حلقہ کے کارکنوں سے ملاقاتیں کر یں گے حکومتی وسائل استعمال ہو تو غلط ہے یوسی 50تخت لاہور والوں کو نہیں دکھتا ، یہ لاہور کا حصہ ہے ، سڑکوں سے گزرا نہیں جا سکتا ، چالیس ہزار کی آبادی میں کوئی سکول ، کوئی گرائونڈ تک نہیں جہاں بچے پڑھ یا کھیل سکیں،   پیرس کا نواز شریف اور شہباز شریف بڑا ذ کر کرتے ہے تخت لاہور اس حلقہ کو بھی اپنا حصہ سمجھیں بنائے عبدالعلیم خان کو حلقہ پی پی  139جبکہ اعجاز احمد چوہدری کو حلقہ پی پی 140کی ذمہ داری ملی ہے کہ فوج کو حلقہ میں تعینات کیا جائے الیکشن کمیشن کے پاس اختیارات ہے کہ غلط کام کرنے والوں کے خلاف کارائی کی جائے، مریم صفدر ، کلثوم نواز کی مہم چلا رہی ہے اور وہ ڈیفیکٹو وزیر اعظم کام بھی کرتی ہے تحریک انصاف میں کوئی اختلافات نہیں اب یہ تخت لاہور نہیں دکھتا لاہور کا حصہ ہے ، اس موقع پر مہر واجد عظیم ، صدیق خان ، عندلیب عباس، ملک عثمان ایڈوکیٹ ، ماسٹر محمد ریاض ، فیروز خان ، شیر خان ، سر گل سمیت بڑی تعداد میں کارکنان موجود تھے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here