سری نگرحریت کانفرنس نے جموں کشمیر کی موجودہ سیاسی صورتحال کو انتہائی ابتر اور سنگین قرار

0
36

حریت کانفرنس ع نے  جموں کشمیر کی موجودہ سیاسی صورتحال کو انتہائی ابتر اور سنگین قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر دنیا کا وہ واحدخطہ بنا دیا گیا ہے جہاں ریاستی دہشت گردی ، قتل و غارت ، ماردھاڑ اور بنیادی انسانی حقوق کی پامالیوں کا بدترین سلسلہ آئے روز کا معمول بن کر رہ گیا ہے اور یہ سب کچھ مسئلہ کشمیر حل نہ کرنے کی وجہ ہے جو حکومت ہند کی روایتی ہٹ دھرمی کی وجہ سے کم و بیش سات دہائیوں سے مسئلہ کشمیر کو معلق رکھا گیا ہے۔ بیان میں سرینگر کے بیشتر علاقوںخاص طور پر شہر خاص کو لگاتار تین روز سے کرفیو اور بندشوں کے دائرے میں لا کر لاکھوں کی آبادی کو گھروں میں محصور کر کے ان کے نقل و حمل کو محدود کردینے اور آئے دن سرکردہ مزاحمتی قائدین میرواعظ محمد عمر فاروق ، بزرگ رہنما سید علی شاہ گیلانی اور محمد یاسین ملک کی بار بار خانہ و تھانہ نظر بندی کی سرکاری کاروائیوں کی مذمت کی گئی۔ بیان میں کہا گیا کہ مشترکہ مزاحمتی قیادت کی جانب سے بھارتی وزیر داخلہ کی کشمیر آمد پر احتجاجی ہڑتال سے یہ بات پھر سے ثابت ہوگئی کہ کشمیر کوئی امن وقانون یا بھارت کا کوئی داخلی مسئلہ نہیں ہے بلکہ یہ ایک سیاسی مسئلہ ہے جسے حق خودارادیت کی بنیاد پر حل کرنا علاقہ اور خطے کے مفاد میں بے حد ناگزیر ہے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here