ڈیپ فرائی کرنے سے کھانے مضر صحت بن جاتے ہیں، ماہرین

واشنگٹن ۔۔۔۔۔ امریکی ماہرین صحت کا کہنا ہے سموسہ اور پیزا دونوں ہی مضرِ صحت ہیں لیکن ان دونوں میں سے صحت کے لیے وہ زیادہ نقصان دہ وہ ہے جسے ڈیپ فرائی کیا جاتا ہے۔ ہاورڈ یونیورسٹی کے ماہرینِ صحت کی جدید تحقیقات سے معلوم ہوا ہے کہ پیزا روٹی(بریڈ) کی وجہ سے کاربوہائیڈرٹس پر مشتمل ہوتا ہے اور اس میں پنیر(چیز)،گوشت اور دیگر اشیا کی صورت میں فیٹ پایا جاتا ہے، پیزا کو تیل میں تلا(ڈیپ فرائی) نہیں کیاجاتا بلکہ مائیکروویو اون میں بیک کیا جاتا ہے جبکہ اس کے مقابلے میں سمومہ کو بیک (پکایا) نہیں بلکہ تیل میں تلا(ڈیپ فرائی )کیا جاتا ہے۔ماہرین کے مطابق آلو اس وقت مضرِ صحت کاربوہائیڈریٹس کا مجموعہ بن جاتے ہیں جب انہیں ڈیپ فرائی کیا جاتا ہے اور اسی وجہ سے اس میں فیٹ کی مقدار بڑھ جاتی ہے، ڈیپ فرائی ہونے کے بعد سموسہ اپنے اندر تیل یا گھی کو جذب کرلیتا ہے اور پیزا کے مقابلے میں زیادہ فیٹ کا سبب بنتا ہے۔اگر دونوں کا موازنہ کیا جائے تو 100گرام پیزا میں 276 جبکہ 100 گرام سموسے میں تقریباً 400 کیلوریز پائی جاتی ہیں اگر سموسے کو ڈیپ فرائی کرنے کے بجائے اوون میں بیک کیا جائے تو اسے صحت کے لیے کم نقصان دہ بنایا جاسکتا ہے۔ ماہرین نے مشورہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ صحت مند رہنے کے لئے ضروری ہے کہ ڈیپ فرائی اشیاء کے زیادہ استعمال سے اجتناب کیا جائے۔

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.