اسلامی دنیا نہتے فلسطینیوں کا قتل عام رو کوائے سید علی گیلانی کی اپیل

سری نگر کل جماعتی حریت کانفرنس گ کے چیرمین سید علی گیلانی نے اسرائیلی صہیونیت کی طرف سے نہتے اور معصوم فلسطینیوں کے خلاف قتل وغارت گری اور دیگر سرکاری دہشت گردانہ کارروائیوں کے دوران 52فلسطینی شہریوں کو بہیمانہ طور قتل کئے جانے پر اپنی گہری تشویش اور دُکھ کا اظہار کرتے ہوئے اسرائیلی جارحیت کی شدید ترین الفاظ میں مذمت کی۔کے پی آئی کے مطابق حریت راہنما نے اس امر پر انتہائی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دوسری عالمگیر جنگ کے بعد معرض وجود میں آئے ہوئے اقوامِ متحدہ جیسے جامع اور مضبوط ادارے کے ساتھ دنیا بھر کے مظلوم، غریب اور پسماندہ اقوام کی امیدیں وابستہ ہوگئی تھیں کہ اب ظالم اور مظلوم میں فرق کرکے طاقتور اور کمزور اقوام کے درمیان مساوات اور انصاف کا بول بولا ہوگا، لیکن حد درجہ افسوس کا مقام ہے کہ دنیا کی بڑی طاقتیں کمزور قوموں کے جملہ حقوق انسانی کو اپنے پیروں تلے روند رہے ہیں اور اقوامِ متحدہ خواب غفلت میں رہتے ہوئے خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہا ہے۔ حریت راہنما نے اسرائیل کی جارحیت اور نوآبادیاتی طرز عمل کی شدید مزمت کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل کو یہ حق نہیں پہنچتا ہے کہ وہ مظلوم فلسطینیوں کو اپنی سرزمین سے بے دخل کرتے ہوئے یہاں یروشلم کو اپنا دارالخلافہ بنائے۔ حریت راہنما نے اسلامی ممالک کی تنظیم OICکے سربراہوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ دنیا بھر میں مظلومین کے خلاف اپنائی گئی ظالمانہ اور جابرانہ پالیسیوں کا بغور جائزہ لیتے ہوئے معصوم اور نہتے فلسطینیوں اور کشمیریوں سمیت ہر خطے کے لوگوں کے خلاف بے دردی کے ساتھ قتل وغارت گری کو روکنے کے لیے اپنے سیاسی اثرورسوخ کو استعمال کریں۔ حریت راہنما نے امید ظاہر کی کہ OICاپنی ملی ذمہ داریوں کو بھانپتے ہوئے انسانی جانوں کی حرمت کے حوالے سے اسلام کے آفاقی پیغام کی روشنی میں ہر طرح کے مظلومین کے حق میں اپنی آواز اُٹھائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں