راولاکوٹ ڈاکٹروں کی غفلت خاتون نے واش روم میں بچے کو جنم دے دیا،نومولود جاںبحق۔

راولاکوٹ(کشمیر لنک نیوز)محمد اسحاق کی امید کی کرن دم توڑگئی لیڈی ڈاکٹر کا دیا ایک ماہ ایک گھنٹے میں مکمل ہو گیا ماں نے ہسپتال کے باہر ہی ہوٹل کے واش روم میں بچہ جنم دے دیا جوسردی کی شدت کے باعث جان کی بازی ہار گیا والدین غم سے نڈھال لیڈی ڈاکٹر زینب کے خلاف کارروائی کا مطالبہ شیخ زاہد ہسپتال کی لیڈی ڈاکٹر کا ستایا اخبار کے دفتر پہنچ گیا تفصیلات کے مطابق راولاکوٹ کے نواحی گائوں سنگولہ کے رہائشی محمد اسحاق نے بتایا کہ گزشتہ روز وہ اپنی بیوی کو بیماری کی حالت میں ہسپتال لایا جہاں ڈیوٹی پر موجود طاہرہ شاکر نامی لیڈی ڈاکٹر نے اس کی بیوی کو داخل کر دیا جو شدید تکلیف او ر خطرناک حالت میں ڈیلیوری کا معاملہ تھا ماں اور بچے دونوں کی جان کو خطرہ تھااس کے جانے کے بعد زینب نامی لیڈی ڈاکٹر ڈیوٹی پر آئی تو اس نے کہا کے ڈیلیوری میں ابھی ایک ماہ باقی ہے اور مریضہ کے پیٹ میں بچہ الٹا ہے اس کا علاج ادھر نہیں ہو سکتا اس نے مریضہ کو راولپنڈی ریفر کر دیا میں نے ہاتھ جوڑ کر منت سماجت کی مگر لیڈی ڈاکٹر کا رویہ انتہائی حاکمانہ تھا اس نے کہا یہاں کیا ڈھونڈتے ہو میں نے لکھ دیا ہے بھاگو یہاں سے میں نے ریفر کر دیا ہے ہسپتال سے نکالنے کے بعد مریضہ کو ایمبولینس پرلے کر نکلا تو دو منٹ بعد اسے شدید تکلیف شروع ہو گئی جس کے باعث ہم قریب ہی ہوٹل پر رک گئے مریضہ ہوٹل کے واش روم میں گئی تو بچہ پیدا ہو گیا جو شدید سردی کے باعث پانچ منٹ زندہ رہا اور جہان فانی سے کوچ کر گیا حالانکہ اگر یہی معاملہ ہسپتال میں دیکھا جاتا تو نتیجہ کچھ اور نکلتا مگر ظالم لیڈی ڈاکٹر زینب کی غفلت کے باعث میرا بچہ ضائع ہو گیا یہ لیڈی ڈاکٹر انتہائی ظالم اور سنگدل ہے میری بیوی کی حالت انتہائی تشوتش ناک ہے وہ زندگی اور موت کی کشمکش میں ہے میرے ساتھ انتہائی ظلم ہوا ہے وزیر اعظم آزاد کشمیر وزیر صحت اور دیگر اعلیٰ حکام نوٹس لے کر مجھے انصاف دلائیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں