مقبوضہ کشمیر اسمبلی پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگانے والے ممبر اسمبلی محمد اکبر لون نے اپنے الفاظ واپس لینے سے انکار کر دیا

جموں(کشمیرلنک نیوز) بھارتی انتہا پسند جماعت بی جے پی نے مقبوضہ کشمیر اسمبلی میں پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگانے والے ممبر اسمبلی کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج کرنے کی تحریک پیش کر دی ہے ۔ بی جے پی کے ممبر اسمبلی رنبیر سنگھ رندھاوا نے تحریک اسمبلی میں جمع کرادی ہے ۔ دوسری طرف پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگانے والے ممبر اسمبلی محمد اکبر لون نے اپنے الفاظ واپس لینے سے انکار کر دیا ہے تاہم سپیکر کے حکم پرپاکستان زندہ باد کا نعرہ اسمبلی کارروائی سے حذف کر دیا گیا ہے ۔پاکستا ن کے حق میں نعرہ بازی کے معاملہ پر اسمبلی کے اندر اور باہر سوموار کے روز بھی سیاسی گرما گرمی جاری رہی ۔ بی جے پی اراکین نے ممبر اسمبلی سونہ واری محمد اکبر لون کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا، دوسری طرف نیشنل کانفرنس کے ممبر اسمبلی محمد اکبر لون کا کہنا تھا کہ انہیں کسی کے سرٹفکیٹ کی ضرورت نہیں ۔ اس بیچ کونسل میں بی جے پی ممبران نے ایوان سے واک آئوٹ بھی کیا ۔قانون ساز اسمبلی کی کارروائی جیسے ہی شروع ہوئی تو اس دوران بی جے پی ممبران اپنی نشستوں سے کھڑے ہوئے اور انہوں نے ممبر اسمبلی سوانہ واری محمد اکبر لون کی طرف سے گذشتہ روز ایوان میں دئے پاکستان کے حق میں نعرے پر اعتراض کرتے ہوئے ان سے صفائی پیش کرنے کا مطالبہ کیا ۔اس پر این سی کے علی محمد ساگر، میاں الطاف ، محمد شفیع اوڑی اور الطاف کلو نے محمد اکبر لون کے دفاع میں اسپیکر سے مخاطب ہو کر کہا کہ ایوان کے ہر ایک ممبر نے آئین اور بھارت کی سالمیت اور وقار کی سربلندی کا حلف لیا ہے اور ان میں کوئی دورائے نہیں ہے ۔علی محمد ساگر نے کہا کہ اسپیکر نے بھی ایسے الفاظ کہے جبکہ بھارت میں آپ کے کچھ ایک لیڈران بھی ایسے بیان دیتے ہیں جس سے مسلمانوں کے جذبات مجرو ح ہوتے ہیں ان کو کیوں کسی نے کچھ نہیں کہا، اس پر دوبارہ بی جے پی ممبران احتجاج کرتے رہے، ڈپٹی اسپیکر نذیر احمد گریزی نے بیچ بچائو کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ دنوں ایوان میں کوئی بات ہوئی اور پھر اس بات کو ایوان سے حذف کیا گیا ۔اب کوئی مقصد نہیں ہے کہ اس بات کو دوبارہ سے ہوا دی جائے ،تاہم بی جے پی ممبران مسلسل احتجاج کرتے رہے ۔اس دوران پارلیمانی امور کے وزیر عبدالرحمن ویر ی نے اگرچہ ممبران کو چپ کرانے کی کوشش کی تاہم وہ دوبارہ محمد اکبر لون کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کرتے رہے ان کا کہنا تھا اکبر لون کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے اور آخر پر ممبران نے ایوان سے واک آئوٹ کیا ۔اس سے قبل بی جے پی ممبران نے اسمبلی کارروائی شروع ہونے سے قبل ہی ایوان کے باہر بھی احتجاج کیا اور اکبر لون کے خلاف نعرہ بازی کی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں