اپنا ٹیبلٹ گم کردینے والی بے رحم ماں ، 3سالہ بیٹی کو تشدد کا نشانہ بناتی رہی

باہیا بلانکا ، ارجنٹائن ….. ارجنٹائن کے دارالحکومت بیونس آئرس کے نواحی علاقے باہیا بلانکا میں ماں کی سفاکی اور بے رحمی کا ہولناک مظاہرہ اس وقت دیکھنے میں آیا جب ایک غیر ذمہ دار ماں نے اپنا ٹیبلٹ کھوجانے کے بعد سارا غصہ 3سالہ بیٹی پر اتار دیا اور اسے تشدد کا نشانہ بنایا اور پھر غیض و غضب کے مارے اس نے بچی کو بالوں سے پکڑ کر گھسیٹا اور فرش پر پٹخ دیا۔ واقعہ کے بعد جیسے ہی سوشل سروسز والوں کو خبر ہوئی وہ موقع پر پہنچے اور انہوں نے بچی اور اسکی دوسرے بھائی بہنوں کو بھی اپنی تحویل میں لے لیا۔ اس حوالے سے جاری ہونے والی وڈیو کو دیکھ کر میڈیا بھی حیران ہے۔ مجموعی طور پر سوشل سروسز والوں نے تین بچوںکو اپنی تحویل میں لیا ہے۔ وڈیو میں صاف دکھائی دے رہا ہے کہ بڑی بچی جس کی عمر صرف 3سال تھی ماں کے تشدد سے بے حال ہوکر چیخ و پکار کررہی تھی مگر بے رحم ماں نے جنونی کیفیت کی وجہ سے یا کسی اور وجہ سے اپنی بیٹی کے بال پکڑے، اسے گھسیٹا اور پھر اسے فرش پر پٹخ دیا۔ سفاک ماں کاکہناتھا کہ اسکا ٹیبلٹ گھر میں ہی تھا جو غائب ہوگیا تھا اوروہ اسے تلاش کررہی تھی۔ یقینی طور پر گھر میں کوئی اور نہیں رہتا اسلئے یہ حرکت بچوں کی ہی ہوسکتی ہے۔ ہولناک وڈیو یہاں سے شروع ہوتی ہے کہ غیض وغضب کی ماری ماں اپنی بڑی بچی جس کی عمر 3سال تھی ڈانٹ پھٹکار کررہی تھی اور اسی دوران اس نے بچی کو کئی تھپڑ بھی مارے اور چیخ کر کہتی رہی کہ تمہیں کیوں یاد نہیں کہ اٹھائی ہوئی چیز کہاں رکھی ہے۔ اب تک حکام نے بچی پر تشدد کے جرم کی مرتکب ماں کا نام ظاہر نہیں کیا ہے۔ یہ وڈیو فیس بک پر بھی جاری ہوئی ہے جسے ہزاروں لوگ دیکھ رہے ہیں او رماں کی سفاکیت اور بربریت پر حیران ہیں۔ اب تک یہ نہیں بتایا گیا کہ ماں کو گرفتار کیا گیا ہے یا اس پر کوئی فرد جرم عائد کی گئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں