مظفر آباد۔۔مقبوضہ کشمیر میں کم سن آصفہ کی آبروریزی اور قتل کے خلاف مظفر آباد میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا

مقبوضہ کشمیر میں کم سن آصفہ کی آبروریزی اور قتل کے خلاف مظفر آباد میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرین نے آصفہ تیرے خون سے انقلاب آئے گا، انصاف دو انصاف دو آصفہ کو انصاف دو، آصفہ کے قاتلوں کو سزا دو، جموں کے مسلمانوں پر مظالم بند کرو،کے فلک شگاف نعرے، احتجاجی لوگوں نے بینرزاور کتبے اٹھارکھے تھے جن پرکلگام کے اندر بھارتی بربریت اور جموں میں آصفہ کے ساتھ ہوئے ظلم کے خلاف نعرے درج تھے، احتجاجی ریلی سے پاسبان حریت کے چیئر مین عزیراحمد غزالی انٹرنیشنل فورم فار جسٹس اینڈ ہیومن رائٹس کے وائس چیئر مین مشتاق السلام پیپلز پارٹی آزاد کشمیر کے راہنماء شوکت جاوید میر، پاسبان کیوائس چیئرمین عثمان علی،البرق مجاہدین کے کمانڈر محمد افضل ایوبی، کمانڈر قاضی محمد خوشحال،جماعت الدعوہ کے راہنما ابو سیاف، اے پی آر سی کے سربراہ لیاقت علی اعوان، مہاجر راہنما محمداسماعیل میر،محمد ادریس ودیگرنے کہا کے جموں میں آصفہ کی آبروریزی اورقتل دنیا بھر کے نام نہاد منصفوں، بھارتی حکمرانوں اور بھارتی عدلیہ کے منہ پر زناٹے دار طمانچہ ہے، بھارت جموں کشمیر کے مسلمانوں کے خلاف ہر وہ جرم کررہا ہے جو انسانیت کو شرمندہ کرے، حکومت ہند پوری ریاستی طاقت کے ساتھ جموں کشمیر کے عوام پر جنگ مسلط کرچکی ہے، مقررین نے کہا کے جموں کے مسلمانوں کو انتہاء پسند ہندو تنظیمیں ہراساں کررہی ہیں تشدد کررہی ہیں اور وادی کشمیر میں جارحیت پسند ہندی فوج نہتے عوام پرجبر ڈھا رہی ہیں شوپیان اور کلگام جیسے واقعات میں کشمیری بچوں اور جوانوں کوقتل کررہی ہیں مقررین نے اقوام متحدہ سلامتی کونسل اورانسانی حقوق کی عالمی تنظیموں پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کے امن،انصاف اور حقوق انسانی کی بات کرنے والے یہ ادارے جموں کشمیر پر مجرمانہ خاموشی اختیار کیئے ہوئے ہیں جس سے بھارت کو جموں کشمیر کے عوام پر مظالم ڈھانے کا موقعہ ملا ہے مقررین نے جموں کشمیر کے عوام کو بھارتی جبر کیخلاف ڈٹے رہنے لازوال قربانیاں پیش کرنے پر خراج عقیدت پیش کیا مقررین نے کہا کے اگر آصفہ کو انصاف نہیں ملتا جموں کے مسلمانوں پر مظالم نہیں رکتے اور وادی کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشت گردی پر روک نہیں لگتی تو ریاست بھر کے جوانوں کے پاس آپنی آزادی اورحصول انصاف کیلیئے میدان عمل میں آنے کے علاوہ کوئی راستہ نہیں بچتا خطاب میں حکومت پاکستان سے معصوم آصفہ کے قتل اور کشمیر بھر میں ہو رہے بے گناہ افراد کی شہادتوں کے مسئلے کو پوری طاقت کے ساتھ دنیا بھر میں اٹھانے کا مطالبہ کیا، بعد ازاںشرکائے ریلی نے گھڑی پن چوک سے برہان وانی شہید چوک تک احتجاجی ریلی نکالی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.